زیر حراست ملزم کی گلے میں پھندا ڈال کر خودکشی

پشاور، زیر حراست ملزم کی گلے میں پھندا ڈال کر خودکشی

ویب ڈیسک: پشاور کے تھانہ مچنی میں بیوی کے قتل کے الزام میں گرفتار 22 سالہ ملزم نے اپنے گلے میں پھندا ڈال کر زندگی کا خاتمہ کر دیا۔
خودکشی کرنے والے شخص کی شناخت ضیاء الرحمان کے نام سے ہوئی ہے۔

ملزم کے ورثا نے ورسک روڈ پر پولیس کے خلاف احتجاج کیا، ورثا کا کہنا ہے کہ 4 روز قبل تھانہ مچنی پولیس نے گھر پر چھاپہ مارا اور گھر سے قتل کے الزام میں ضیاء الرحمن کو گرفتار کر کے لے گئے۔ گرفتاری کے بعد ضیاء الرحمن حوالات میں مردہ پائے گئے۔ مظاہرین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ضیاء الرحمن کو حوالات میں قتل کیا گیا ہے۔

پولیس کا موقف ہے کہ متوفی ضیاء الرحمن نے گلے میں پھانسی کا پھندہ ڈال کر خود کشی کی، ملزم کو اپنی ہی بیوی کے قتل کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔ ایس ایس پی آپریشن کاشف آفتاب عباسی نے واقعے کے بعد محررتھانہ مچنی کو ملازمت سے معطل کر کے لائن حاضر ہونے کا حکم جاری کر دیا۔

مزید دیکھیں :   پاپائے روم فرانس کی روس اور یوکرین سے تشدد اور موت کا سلسلہ بند کرنے کی اپیل