پب جی گیم نے ایک اور نوجوان کو موت کے گھاٹ اُتار دیا

لاہور: آن لائن گیم پب جی نوجوانوں کی زندگیاں چھیننے لگی ہے، اس گیم میں ہارنے کی وجہ سے ایک اور نوجوان نے خود کشی کر لی،پولیس کے مطابق صوبہ پنجاب کے دارالحکومت میں بیس سالہ نوجوان نے پب جی گیم  ہارنے پر پھندا لگا کر مبینہ طور پر خودکشی کرلی،

ایس ایچ او تھانہ فیکٹری ایریا لیاقت علی کا کہنا تھا کہ پنجاب سوسائٹی کی حدود میں بیس سالہ نوجوان نے پب جی میں ہارنے کی وجہ سے گلے میں پھندا ڈال کر خودکشی کی،اس سے پہلے بھی لاہور میں ہی دو نوجوان ’’پب جی’’ کی وجہ سے اپنی زندگیوں کا خاتمہ کرچکے ہیں،پولیس کا کہنا ہے کہ لاش کو تدفین کے لیے ورثا کے حوالے کر دیا گیا ہے،

چند روز قبل مشہور آن لائن ویڈیو گیم پب جی کھیلنے سے منع کرنے پر دو خود کشیوں کی وجہ سے لاہور پولیس کی جانب سے گیم پر پابندی لگوانے کے لیے اعلی حکام کو خط  بھی لکھا گیا تھا،ذرائع کے مطابق لاہور پولیس کے ترجمان نے بتایا تھا کہ پب جی گیم کھیلنے سے ہونے والی خود کشیوں کا جائزہ لیا جا رہا ہے،

انہوں نے کہا کہ پب جی گیم کے نقصانات جانچنے کے لئے ماہرین کی رائے بھی لی جائے گی جبکہ گیم بند کرانے کے لئے پی ٹی اے اور ایف آئی اے کو خط لکھا جائے گا،ان کا کہنا تھا کہ پب جی گیم ڈیجیٹل نشہ کی صورت اختیار کرتا جا رہا ہے، پہلے واقعہ کی وجہ یہ گیم تھی، دوسری خود کشی میں بھی ایسے ہی اطلاعات ہیں،

انہوں نے مزید کہا کہ اس معاملےکی ہر پہلو پر تحقیقات جاری ہیں، نوجوان ہماری قوم کا اثاثہ ہیں، ان کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے گا۔