پارٹنر شپ لگنے سے دوسری ٹیم پر دباؤ ہوتا ہے، کرکٹریونس خان

ویب ڈیسک(‏اسلام آباد) قومی کرکٹ ٹیم کے بیٹنگ کوچ یونس خان نے اپنے بیان میں کہا ہےکہ فہیم اشرف ایک آلراؤنڈر کا کردار ادا کر رہے ہیں،امید ہے فہیم اشرف عمدہ کارکردگی کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔‏ فہیم اشرف کے کھیل میں بہتری آرہی ہے، وہ اچھے باؤلنگ آلراؤنڈر بننے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ٹاپ آرڈر سے رنز نہیں ہو ئے لیکن انہوں نے کریز پر وقت ضرور گزارا، فہیم اشرف کے لیے اسٹیج تیار تھا، جب وہ کریز پر پہنچے تو پچاس اوورز ہو چکے تھے،ٹاپ آرڈر میں ‏ایک اچھی پارٹنر شپ ہو جاتی تو ابھی صورتحال مختلف ہوتی۔

محمد رضوان کی جتنی تعریف کی جائے کم ہےانگلینڈ میں بھی اچھا کھیلے، ان کی آج کی اننگز بالکل مختلف تھی، ‏محمد رضوان ایک میچوراور سنئیر پلئیر کے روپ میں نظر آ رہے ہیں۔اگر اسی طرح کھیلتے رہے تو پاکستان کو بہت فائدہ ہوگا۔

انہوں کا مزید کہنا تھا کہ ‏ کپتان کی اپنی کارکردگی بہت اہمیت رکھتی ہے، پرفارمنس اچھی ہو تو فیلڈ میں فیصلے بھی اچھے ہوتے ہیں،کھیل کے دوسرے روز شان مسعود کا آؤٹ ہونا پاکستان ٹیم کے لیے بدقسمت رہا،‏کھیل کے تیسرے روز ناٹ آؤٹ سیٹ بیٹسمین کھیل رہے ہوتے تو بہت فائدہ ہوتا، پارٹنر شپ لگنے سے دوسری ٹیم پر دباؤ ہوتا ہے۔

اگر اننگز میں سو رنز کی دو سے تین پارٹنر شپ ہو جائیں تو بہت فائدہ ہوجاتا ہے، نیوزی لینڈ کی اننگز میں بھی اسی طرح ہوا، انہوں نے ایک لمبی اور دو چھوٹی چھوٹی پارٹنر شپ لگائیں اور چارسو رنز بنالیے۔