اسرائیل کی وحشیانہ بمباری، 8 ہزار سے زائد فلسطینی شہید

اسرائیل کی جانب سے غزہ پر مسلسل 24 روز بارود برسایا گیا جس سے غزہ کو کھنڈر بن گیا۔
ویب ڈیسک: وسطی غزہ میں اسرائیل کی وحشیانہ بمباری سے دیرالبلا کی مسجد بلال بن رباح بھی شہید ہو گئی جبکہ قریب کا پورا علاقہ کھنڈر بن گیا اور اس علاقہ میں بے گھر افراد کیلئے بنی پناہ گاہیں بھی تباہ ہو گئیں۔
اسرائیلی طیاروں نے غزہ کے سب سے بڑے الشفا ہسپتال کے قریب بم برسا کر القدس ہسپتال کی جانب آنے والے راستوں کو تباہ کر دیا۔ یاد رہے کہ اسرائیل کی وحشیانہ بمباری سے بچے بھی شہید ہو گئے۔ ڈاکٹرز کے مطابق ہسپتال زخمیوں سے اور مردہ خانے لاشوں سے بھرے پڑے ہیں، شمالی غزہ کا علاقہ ملبے کے ڈھیر میں تبدیل ہو چکا ہے۔
7 اکتوبر سے اب تک ہونیوالی بمباری میں شہداء کی تعداد 8 ہزار سے تجاوز کر گئی جبکہ زخمیوں کی تعداد 20 ہزار تک جا پہنچی جن میں 3 ہزار سے زیادہ بچے شامل ہیں۔

مزید پڑھیں:  چینی، گھی، چاول سمیت اشیائے خوردونوش کی قیمتوں کو پر لگ گئے